بیرون ملک ملازمت کے نام پر پیسے لوٹنے والے فراڈیوں سے محتاط رہیں

بیرون ملک ملازمت کے نام پر پیسے لوٹنے والے فراڈیوں سے محتاط رہیں۔کچھ جرائم پیشہ لوگ سوشل میڈیا پر بیرون ملک ملازمت کے متعلق جعلی اشتہارات پھیلاتے ہیں۔ ان اشتہارات کے زریعے جب کوئی رابطہ کرتا ہے تورجسٹریشن فیس، پروسیسنگ فیس، میڈیکل فیس وغیرہ کے نام پر بھاری رقم وصول کر لی جاتی ہے۔ ان خیالات کا اظہار سائبر سکیورٹی آف پاکستان کے چیف ٹیکنالوجی آفیسر محمد اسد الرحمن نے سوشل میڈیا پر پھیلنے والے بیرون ملک ملازمت کے اشتہارات کی حقیقت بتاتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ ابتدا میں کچھ رقم رجسٹریشن فیس یا سروس چارچز کے طور پر لی جاتی ہے۔ انٹرویو کے جعلی عمل اور کاغذات کی جانچ پڑتال کے بعد متاثرہ شخص کو سلیکٹ ہونے کی خوشخبری دیتے ہوئے پاسپورٹ کی تفصیلات بھی لے لی جاتی ہیں۔ اصل معاملہ تب شروع ہوتا ہے جب اسے میڈیکل کے لیے اور بعد میں ویزا یا پاسپورٹ پروسیسنگ کے لیے رقم منتقل کرنے کا مطالبہ کیا جاتا ہے۔اسی طرح کئی متاثرہ افراد سے خطیر رقم لوٹ لینے کے بعد یہ جعلی کمپنیاں اپنا دفتر بند کر کے غائب ہو جاتی ہیں۔ عوا م الناس کو مطلع کیا جاتا ہے کہ ایسی جعلی کمپنیوں سے ہوشیار رہیں۔ 

اپنا تبصرہ بھیجیں