سوشل میڈیا پر انجان لوگوں سے دوستی سے ہوشیار

سوشل میڈیا پر جعلی اکاؤنٹ بنا کر لوگوں سے دوستی کرتے ہوئے غیر اخلاقی تصاویر منگوا لی جاتی ہیں۔ بعد میں ان تصاویر کو استعمال کر کے بلیک میل کیا جاتا ہے۔ان خیالات کا اظہار سائبر سکیورٹی آف پاکستان کے چیف ٹیکنالوجی آفیسر محمد اسد الرحمن نے سوشل میڈیا کے زریعے کی جانے والی بلیک میلنگ کے متعلق گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ سوشل میڈیا پر کئی جرائم پیشہ افراد لڑکیوں کے نام سے جعلی اکاؤنٹس بنا کر لوگوں سے دوستی کرنے کی کوشش کرتے ہیں اور پھر اپنی غیر اخلاقی تصاویر شیئر کر دیتے ہیں۔ بعد میں ان لوگوں کی غیر اخلاقی تصاویر کا استعمال کرتے ہوئے انہیں بلیک میل کیا جاتا ہے اور پیسے مانگے جاتے ہیں۔ پیسے نہ دینے پر سوشل میڈیا پر تصاویر وائرل کر دینے کی دھمکی دی جاتی ہیں۔ اسی طرح جرائم پیشہ افراد جعلی اکاؤنٹ بنا کر خود کو امیر لڑکا ظاہر کرتے ہوئے لڑکیوں سے دوستی کر لیتے ہیں اور انہیں شادی کے جھوٹے دعوے کرتے ہوئے ان کی غیر اخلاقی تصاویر منگوا لیتے ہیں۔ بعد میں انہی تصاویر کے زریعے انہیں بلیک کیا جاتا ہے۔انہوں نے کہا کہ عوام ایسے جرائم پیشہ افراد و جعلی سوشل میڈیا اکاؤنٹس سے محتاط رہے اور سوشل میڈیا پر صرف اپنے جاننے والوں سے رابطہ رکھیں۔ کسی بھی انجان شخص سے دوستی بڑھانے، اپنی ذاتی معلومات و تصاویر شیئر کرنے سے گریز کریں نہیں توآپ بلیک میلنگ کا نشانہ بن سکتے ہیں۔

سوشل میڈیا پر انجان لوگوں سے دوستی سے ہوشیار” ایک تبصرہ

اپنا تبصرہ بھیجیں